مشترکہ چوہا

تحریر: شاندار بخاری

مقیم مسقط

گھنٹی بجی اور سامنے برابر والے مکان میں رہنے والے ہمارے الجیرین پڑوسی کھڑے تھے۔۔ ہاتھ سے کرونا کا متعارف کردہ سلام کیا اور کہا کہ آپ کا چوہا ہمارے گھر آیا تھا اور ٹیلیفون کی تار کاٹ دی ہے اس نے ۔۔ مجھے یہ بات سن کر تعجب ہوا کہ نا تو میرے پاس کوئی پالتو چوہا ہے اور نا میں نے کبھی اس علاقے میں کوئی چوہا دیکھا تو پھر یہ اتنے یقین سے اسے میرا چوہا کیوں کہ رہے ہیں ؟ کیا یہ چوہا فلمیں دیکھتا ہے ! جس میں ڈاکو جو کسی خاص گروہ سے تعلق رکھتے ہیں اور مشہور ہونے کیلئیے واردات کے بعد جاتے ہوئے اپنا بزنس کارڈ وہاں پھینک گیا تھا ؟ یا انہوں نے اسے میرے ساتھ یا میرے گھر سے نکلتے اور آتے جاتے دیکھا ہے ؟ ان سب باتوں کا جواب انہوں نے نفی میں دیا لیکن اپنی بات پر ڈٹ گئے کے نہیں یہ آپ ہی کا چوہا ہے آپ اسے روکیں یا پھر میں شکایت درج کروں مجھے اس بات پر ہنسی آ گئی میں نے ان سے کہا اندر آئیے اور مجھے سمجھا ئیں کہ یہ چوہا اس سارے جہاں اور محلے میں میرا ہی کیوں ہوا تو انہوں نے کہا کی کیونکہ آپ میرے پڑوسی ہیں ، اور آپ کے باورچی خانے اور میرے باورچی خانے میں صرف ایک دیوار ہے اور چوہا کیونکہ میرے باورچی خانے میں دیکھا گیا تھا اور پھر اگلے دن ذائقہ بدلنے کیلئیے اس نے میرے ٹیلیفون کی تار چبا ڈالی تو ہو نا ہو وہ پہلے آپ کے گھر آتا تھا اب اس نے ہمارا گھر بھی دیکھ لیا ہے تو اب وہ یہاں بھی آتا ہے یہ عجیب و غریب منطق سن کر مجھے تعجب ہوا کہ جانے یہ کونسا نشا کرتے ہیں یا تو ان کی بیگم نے جو کہ دیا بس اسی لکیر کو پیٹ پیٹ کر سانپ بنانا چاہ رئے ہیں خیر میں نے ان سے کہا کہ گھر کا کیونکہ نقشہ قدرے ملتا جلتا ہے تو پھر تو یہ ہمارا مشترکہ چوہا ہوا جیسے آپ مجھ پر الزام لگا رئے ہیں وہی صورت حال میری طرف بھی ہو سکتی ہے تو ہوسکتا ہے چوہا آپ کا ہو لیکن دونوں طرف آتا جاتا ہو ۔۔ اس بات پر پڑوسی صاحب تذبذب کا شکار ہوگئے کیونکہ وہ گھر سے اتنا ہی مصالہ لے کر آئے تھے اور میرے اس جواب کی وہ توقع نہیں کر رئے تھے تو لا حول ولا قوة الا بالله العلي العظيم پڑھتے ہوئے وہاں سے واپس اپنے گھر چلے گئے اور یوں میں نے بنا اشتعال میں آ ئے ایک بچگانہ سے معاملہ کو سلجھایا اور اس سارے قصہ کے پیچھے اصل بات یہ ہے کہ ہمارے حالات ہمارے اپنے فیصلوں اور اقدام کا نتیجہ ہوتے ہیں ان کو کسی سائے کسی کالی بلی یا کسی اور شخص پر نہیں تھوپنا چائیے اگر آپ سے کوئے غلطی ہو جائے تو اسے اپناہین اور اسے سدھاریں ورنہ وہ اس چوہے کی طرح پل کر اتنا موٹی تازہ ہوجائے گا کہ آپ کے گھر کو ہی کتر دے گا۔ اسی طرح اپنے ارد گرد کے ماحول کو صاف رکھیں کوڑے دان میں ہی۔ کوڑا پھینکیں یہ سوچ کر نا چھوڑیں کہ محکمہ صفائی والے اٹھا لیں گے یہ ماحول اور معاشرہ ہم سب کا یکساں ہے اور ہم اس کے خراب یا خوشحال ہونے میں برابر کے شریک ہیں ۔

شاندار بخاری
شاندار بخاری

شاندار بخاری

Next Post

رنگیں نہ اور قصّے یہاں کے سُنا مجھے

جمعہ دسمبر 18 , 2020
رنگیں نہ اور قصٗے یہاں کے سُنا مجھے
عمران اسد