یوم اقبال

آج یوم اقبال پر کہیں سوگ تنسیخ تعطیل رہا تو کہیں ستائش شاعر شرق تھی۔ مگر میں سارا وقت یہی سوچتا رہا کہ پھر ایک سال تک سب اپنے سیاسی اور فقہی اختلافات کو مستند کرنے کی دھن میں ایروں غیروں کے اشعار کو اقبال علیہ رحمتہ سے منسوب کرتے رہیں گے۔ اگر اتنا وقت نہیں کہ اقبال کو پڑھ سکیں تو کم از کم اقبال کو اپنے اختلافات پر سند نہ بنایا جائے۔

#آغاجہانگیربخاری

٩نومبر ٢٠١٦ء

٩ صفرالمظفر ١٤٣٨ھ

#افکارجہانگیری

#یوم_اقبال

(یہ تحریر ۲۰۱۶ ء کی ہے)

آغا جہانگیر بخاری

بانی مدیر و چیف ایگزیکیٹو

Next Post

قیامت کے بعد لکھی گئی نظم

پیر نومبر 9 , 2020
مناظر 94 خدا نے لاج جو رکھی مری سرِ محشر مرے زمانے کو حیرت تھی میری بخش پر کوئی کسی سے یہ کہتا تھا دیکھیے ایدھر اسے نہ دیکھا کسی نے کبھی خدا کے گھر یہاں پہ بیٹھے ہوئے ہیں جناب مسند پر اِک اور جاننے والا بھی تھا بہت […]
nusrat bukhari

مزید دلچسپ تحریریں