اٹک میں فن موسیقی کابانی گھرانہ

تحریر و تحقیق رضا سید

اٹک شہر میں کئی دہائیوں سے مقیم فن موسیقی کا استاد گھرانہ جس نے نہ صرف پاکستان میں بلکہ عالمی سطح پر اپنے فن کا لوہا منوایا ۔

استاد فقیر حسین خانصاحب
استاد فقیر حسین خانصاحب


استاد فقیر حسین نے پنجاب بینڈ کی بنیاد رکھی مجھے یاد ہے کہ ہر متمول گھرانے کی شادی میں نوے کی دہائی میں خصوصی اہتمام اور مخصوص وردی میں ملبوس پنجاب بینڈ جب اپنے فن کا جادو جگاتا تو سماں بندھ جاتا ۔استاد فقیر حسین مرحوم نے مسلح افواج کے بینڈز کو کئی لائق شاگرد دئیے جنھوں نے سرکاری بینڈ میں بہت نام کمایا ۔

استاد فقیر حسین کی رحلت کے بعد انکے بیٹے استاد دلاور حسین نے بینڈ کی کمان سنبھالی اور فن موسیقی کو اٹک میں چار چاند لگا دئیے پنجاب میوزک اکیڈمی کی بنیاد رکھی ان کے ہونہار شاگرد ملکی سطح پر فن کا مظاہرہ کر آئے ان کی پیروی میں اٹک میں میوزک اکیڈمیز معرض وجود میں آئیں مگر یہ میوزک کا بانی گھرانہ اپنی مثال آپ ہے ۔

استاد دلاور خانصاحب
استاد دلاور خانصاحب

استاد دلاور کی ناگہانی موت نے اس گھرانے کو دکھ و الم میں مبتلا کردیا ۔

اس موقع پر استاد فقیر حسین کے سب سے چھوٹے فرزند استاد ناصر حسین نے نا صرف فن موسیقی کی روایات کو سنبھالا بلکہ اکیڈمی کو عالمی سطح پر متعارف کروایا ناصرف گائیکی کی خداد صلاحیتوں سے مالا مال شخصیت ہے یہ مرے کلاس فیلو بھی ہیں سکول وقت میں ہم پی ٹی وی کی تعلیمی دورہ پر گئے تو مجھے یاد ہے کہ ناصر نے وہاں میوزک کے استاد کو ایک غزل سنائی وہ استاد مبہوت ہوگئے یہ ہی ناصر ملائشیا دوبئی ہانگ کانگ سنگا پور میں بطور گائیک اپنے لوہا منوا کرآئے اور ملک پاکستان اور اپنے شہر کا نام روشن کیا آج بھی وہ ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام اٹک آئڈل اپنی مدد آپ کے تحت چلا رہے ہیں جس کو ملکی سطح پر پزیرائی ملی ۔

ناصرحسین صاحب
ناصرحسین صاحب

ہماری کوشش ہے اٹک کے اس عظیم ٹیلنٹ کو نئی نسل سے بھی متعارف کروائیں جلد استاد ناصر حسین کا ڈائری ٹی وی پر تفصیلی انٹرویو نشر کیا جائے گا ۔


از رضا سید

رضا نوشت، رضا سید کی تحریریں
رضا نوشت، رضا سید کی تحریریں

رضا سیّد

لکھاری،تجزیہ نگار،کالم نویس،اصلاح پسند، سماجی نقاد

Next Post

آگے کنواں پیچھے کھائی

پیر فروری 1 , 2021
ھندوستان میں کسان تحریک کیا رخ اختیار کریگی ۔ مودی جی کہاں کھڑے ہیں ۔ کیا خالصتان تحریک دوبارہ زندہ ہوچکی ہے
SAS Bukhari