سعادت حسن آس کی آبگینہ نور

سعادت حسن آس کی آبگینہ نور

سعادت حسن آس کا ساتواں نعتیہ مجموعہ ” آبگینہ نور” نور کی سیکڑوں شعاعوں سے قلب و روح کو منور کرتا ہے. اس کتاب میں آپ کو رسول ﷺ کے ساتھ والہانہ عشق اور مدد کی اپیل نظر آئے گی. آس صاحب اس بارگاہِ عظیم کو اپنی مصیبتوں کا واحد حل سمجھتے ہیں. وہ مستغیث بن کر رسول اللہ کے سامنے فریاد کناں نظر آتے ہیں اور یقین اتنا ہے کہ کہیں بھی پریشانیوں پر افسردہ یا مایوس دکھائی نہیں دیتے. ان کے مضامین نعت یکسانیت کے باوجود متنوع اسالیب میں رچے بسے ہیں.

سعادت حسن آس کی آبگینہ نور

ایک بات کو کئی انداز میں دہرا کر بھی اس میں الگ ذائقہ رکھنے کا ہنر جانتے ہیں اور قاری متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا. نعت جیسی نازک صنف کے ساتویں پڑاؤ پر بھی ان کے لہجے میں تھکاوٹ اور قلم میں لغزش کا شائبہ تک نہیں ہوا بلکہ اس میں مزید توانائی کا غلبہ نظر آتا ہے. اس کتاب میں انھوں نے لمبی ردایف کو وافر مقدار میں برتا ہے اور یہ ردایف خالصتا ان کی اپنی ایجاد ہیں. شعر کے ناقد اس بات سے بخوبی واقف ہیں کہ لمبی ردیفیں اساتذہ کی قادر الکلامی پر دلالت کرتی تھیں اور ہمارے بعض متقدمین شعرا تو ان کا حق بھی ادا نہیں کر سکے لیکن آس صاحب اس میدان کے بھی شاہ سوار ہیں لہذا ہمیں کہیں بھی شعر کے مضامین میں طویل ردیف کی وجہ سے عدم ابلاغ کا گمان نہیں ہوتا.

تمام تحریریں لکھاریوں کی ذاتی آراء ہیں۔ ادارے کا ان سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

streamyard

سجاد حسین سرمد

مدیر : سہ ماہی دھنک رنگ - فتح جنگ لیکچرر اردو کیڈٹ کالج مہمند

Next Post

اعترافِ عظمت و اظہارِ عقیدت

منگل اگست 8 , 2023
پیدائشی استاد تھے بچے کو سمجھانا ہو یا بڑے کو تعلیم دینا خوب جانتے تھے ۔ ایک نسل کو زیور ِ تعلیم سے آراستہ کر گئے ۔
اعترافِ عظمت و اظہارِ عقیدت

مزید دلچسپ تحریریں