پاکستان اپنی میسجنگ ایپ تیار کرے گا

ایک ویب خبر کے مطابق پاکستان نے جدید ترین حفاظتی خصوصیات کے ساتھ ایک عالمی معیار کی سوشل نیٹ ورکنگ ایپ تیار کرنےاکا فیصلہ کیا ہے ، جس میں مواصلات ، وائس کالز اور ویڈیوز سمیت مواصلات کی تمام جدید خصوصیات شامل ہوں گی۔

iattock
پاکستان

اسے وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی اور آئی ٹی کے ماہرین تیار کریں گے۔
حکومت نے اس مقصد کے لئے مشاورت شروع کردی ہے اور وفاقی کابینہ سے منظوری کے بعد اس منصوبے پر کام شروع ہوگا۔

وفاقی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی امین الحق نے بتایا کہ وزارت نے قومی سطح پر لوگوں کی سہولت کے لئے ایک سوشل نیٹ ورکنگ ایپ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔
صارف اپنے موبائل اور CNIC نمبروں کا استعمال کرکے ایپ کے ساتھ اندراج کرسکیں گے۔

دیگر خصوصیات کے علاوہ ، ایپ لوگوں کے ڈیٹا اور پیغامات کے مکمل تحفظ کو یقینی بنائے گی جبکہ صارف کی ذاتی معلومات کو بھی شریک نہیں کیا جائے گا۔
پہلے مرحلے میں ، تجرباتی بنیاد پر تیار ہونے کے بعد اسے بڑے شہروں میں لانچ کیا جائے گا ، جس کے بعد اس کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔

وزیر آئی ٹی کے مطابق ، اس سماجی رابطے کی ایپ کی ترقی پر کام جلد شروع ہوگا۔
امین الحق نے کہا کہ ہم اس سال سوشل نیٹ ورکنگ ایپ لانچ کرنے کی کوشش کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایپ کے استعمال کے قواعد مقررہ وقت پر بنائے جائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وزارت اور مقامی آئی ٹی ماہرین جلد ہی اس مواصلاتی ایپ کی ترقی پر کام شروع کردیں گے۔
وزیر کے مطابق ، ایپ آئی ٹی کے شعبے میں بڑا انقلاب لائے گی اور روزگار کے مواقع میں اضافہ کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ اس سماجی رابطے کی ایپ کو وزارت آئی ٹی کے تحت عمل میں لایا جائے گا۔

خبر: ٹریبیون ڈاٹ کام ڈاٹ پی کے

روبالہ تخلیق

Next Post

کامرہ کلاں - حصہ دوم

بدھ جنوری 13 , 2021
ایک قدیم مسجد "مسجد زین العابدین"کو یہ خاص فضلیت حاصل ہے کہ یہاں شیعہ،وہابی،دیوبندی ایک جگہ نماز پڑھتے دکھائی دیتے ہیں۔
kamra kalan