احساس دی سویر

شاعر معاشرے کا نباض ہوتا ھے دکھتی رگوں پر ہاتھ رکھ کر اسے عام فہم سادہ اور دلچسب الفاظ میں بیان کرتا ھے یہی حال کہانی کار اور ڈرامہ نگار کا بھی ہوتا ھے وہ اپنے ارد گرد پیش آنے والے واقعات و تجربات کو کہانی کی صورت میں لکھ کر امر کر دیتا ھے۔

ehsaas di swer

ڈرامہ نگار بھی اپنے ڈراموں میں اصلاح معاشرہ کیلئے نمایاں اور سبق آموز واقعات کا انتخاب کرتا ھے اور ان کرداروں کو تخلیق کرتا ھے جو ایک عام آدمی کو متاثر کریں سید تصور حسین بخاری جن کا تعلق اٹک کے مردم خیز خطہ سے ہے شاعر اور ادیب ہونے کے ساتھ ساتھ ڈرامہ نگاری میں بھی اہم مقام رکھتے ہیں ان کے لکھے گئے ڈرامے پاکستان ٹیلی ویژن پشاور سنٹر سے دو دہائیوں سے پیش کیے جا رہے ہیں ۔

احساس دی سویر

ان کے تحریر کردہ مشہور ڈراموں میں انجام،ڈیوا،خوف،احساس،فتنہ،بوجھ،فیصلے کی گھڑی،احساس دی سویر،تقدس۔سنہری لکیریں،بے ایمانی کی سزا و دیگر کئی ڈرامہ سیریل شامل ہیں جنہیں عوامی سطح پر پزیرائی حاصل ہوئی سید تصویر بخاری نے ہندکو ادب کے فروغ اور اس کی ترقی کے لیئے بہت کام کیا آپ کے لکھے گئے ہندکو ڈراموں کو گندھارا ہندکو اکیڈمی پشاور نے ایک خوبصورت دیدہ زیب کتاب کی صورت میں محفوظ کیا تصور بخاری کے ڈراموں کا یہ خاصہ ھے کہ وہ اصلاح احوال کا فریضہ انجام دینے کے ساتھ تفریع طبح کا باعث بھی ہیں ان کی تحریریں انتہائی مثبت رنگ کی حامل ہیں اور انشاء اللہ وہ دن دور نہیں جب ان کا شمار صف اول کے ڈرامہ نگاروں میں ھو گا۔

shuja awan

ڈاکٹر شجاع اختر اعوان

ڈاکٹر شجاع اختر اعوان

Next Post

7اپریل ...تاریخ کے آئینے میں

جمعرات اپریل 7 , 2022
7اپریل ...تاریخ کے آئینے میں
7اپریل …تاریخ کے آئینے میں