یہ خاک میرے دیس کی ہے کیمیا مجھے

یہ خاک میرے دیس کی ہے کیمیا مجھے
بن  کر دِیا  دکھاۓ  گی ہر راستہ مجھے
ہے  پاک  سر زمیں میری  سجدہ  گاہِ دل
ہے عشق اپنے دیس سے بے انتہا مجھے
سورج  سے بھی عزیز تر، ہر ذرہ وطن
ہر ذرہ وطن سے ہے ملتی ضیاء مجھے
جان و دل سے بڑھ کر مجھے یہ وطن عزیز
پرچم کا سبز رنگ ہے، رنگِ حنا مجھے
چھوڑو، دیارِ غیر کو، آ جاؤ دیس میں
دیتا ہے  زرہ زرہ  وطن  کا صدا مجھے
ہر  آن  ہوں  دفاعِ  وطن  پے میں نثار
اب موت ہی کرے گی اس سے جدا مجھے
موت آۓ مجھ کو اپنے وطن کی زمیں پر
وہ  دن کبھی  دِکھاۓ گا میرا خدا مجھے
…یہ خاک میرے دیس کی ہے کیمیا مجھے
بن  کر دِیا  دکھاۓ  گی ہر راستہ مجھے
کلام: عمران اسد

عمران اسد

عمران اسدؔ

پنڈی گھیب

حال مقیم مسقط، سلطنت آف عمان

عمران اسؔد

Next Post

کرسیِ جناح تا مینار پاکستان

منگل مارچ 23 , 2021
یہ دنیا میں ایک انوکھا واقع تھا کہ قرارداد منظور ہونے کے بعد صرف سات سال میں ایک پورا ملک معرضِ وجود میں آگیا
Quid-e-Azam