دیوالیے

شہر کے اس محلے میں پروچن ہورہاتھا۔ سوامی جی بڑے جانکار معلوم پڑرہے تھے۔ اپنے پروچن کے دوران سوامی جی نے کہا: جس طرح تکون کے تین کونے ہوتے ہیں ٹھیک اسی طرح آتما اور پرماتما ایک دوسرے سے ملتے ہیں۔

عقیدت میںڈوبے سننے والے بولے:واہ !

سوامی جی نے آگے کہا:جس طرح چاند، سورج اور زمین گول ہے ٹھیک اسی طرح بھگوان زمین پر اوتار لیتے ہیں۔

بھگتوں سے کہا:واہ!واہ!!

sadhu
Image by Rajesh Balouria from Pixabay

سوامی جی بہت ہی زیادہ جوش کے ساتھ ناچتے ہوئے کہا:جس طرح کمپیوٹرکی میموری ہوتی ہے ، اسی طرح روح ٹیلی ویژن کے جیسی ہوتی ہے۔

لوگ واہ!واہ!!کرتے ہوئے سوامی جی کے ساتھ ناچنے لگے۔

اس واقعے کے دوران پاگل خانے کی ایک گاڑی وہاں آکر رکی ، اور اس میں سے ڈاکٹر، کمپاﺅنڈر اور دیگر ملازم اترے۔ انھوں نے لوگوں کو بتایا کہ یہ سوامی پاگل خانے سے بھاگاہواایک خطرناک پاگل ہے۔

ہمارے سوامی جی کو پاگل بتاتے ہو….کہتی ہوئی غصائی بھیڑپاگل خانے ملازموں پرٹوٹ پڑی۔

معنی…. 1واعظ 2ناصح 3مثلث 4معتقد

aalok-kumar-

آلوک کمار ساتپوتے

افسانہ نگار

چھتیس گڑھ صوبہ کے سرکاری رسالہ کے مدیرکے فرائض انجام دے رہے ہیں۔

ہندوستان کے تمام پروگیسیو اخبارات و رسائل میں افسانے شائع ہوچکے ہیں۔

آلوک کمار ساتپوتے

تعلیم : ماسٹرآف کامرس پیشہ : سرکاری ملازم حکومت چھتیس گڑھ منصب : چھتیس گڑھ صوبہ کے سرکاری رسالہ کے مدیرکے فرائض انجام دے رہیں ہے۔ ٭ ہندوستان کے تمام پروگیسیو اخبارجیسے:دینک بھاسکر، راجستھان پتریکا، امراجالا، راشٹریہ سہارا، نوبھارت، ہری بھومی، دیش بندھو وغیرہ میں منی افسانوں کی اشاعت عمل میں آچکی ہے۔ ٭ ہندوستان کی تقریباً سبھی پروگیسیو رسائل جیسے:ہنس، کتھادیش، واگرتھ، عام آدمی، کتھاکرم، ورتمان ساہتیہ،قدم بینی، پاکھی، پنرنوہ وغیرہ میں بھی منی افسانوں کی اشاعت عمل میں آچکی ہے۔ ٭ ریڈیو رائے پور سے افسانے نشرہوچکے ہیں

Next Post

کربلا والے اور نمازِ شب

جمعہ جولائی 23 , 2021
آج ملت اسلامیہ بی بی زینبؑ کی مقروض ہے وہ عظیم بی بی جس کا کچھ نہ بچا لیکن ہمارے پردے اور ہماری عزت و ناموس کو بچا گئی ہے
light art vintage architecture

مزید دلچسپ تحریریں