شاعری

اک رات مرے گھر میں وہ مہمان رہے گا

حبدار قائم

اک رات مرے گھر میں وہ مہمان رہے گا” تا حشر مرے سر پہ یہ احسان رہے گا”بے لوث محبت کے عوض جانِ تمناتا عمر مرے دل کا تو سلطان رہے گااک بار صنم تیری وجاہت کو جو دیکھےہر بار تجھے دیکھے یہ ارمان رہے گااس ملک میں قاتل کو …

مزید پڑھیں »

قیامت کے بعد لکھی گئی نظم

خدا نے لاج جو رکھی مری سرِ محشر مرے زمانے کو حیرت تھی میری بخش پر کوئی کسی سے یہ کہتا تھا دیکھیے ایدھر اسے نہ دیکھا کسی نے کبھی خدا کے گھر یہاں پہ بیٹھے ہوئے ہیں جناب مسند پر اِک اور جاننے والا بھی تھا بہت ششدر وہ …

مزید پڑھیں »